Ek jali ایک جلی

پر سب کچھ ایک جلی تھی
موحبّت بس ایک گلی تھی
تداپ کر زندہ لوٹ آیا اس باطل سے
کچھ عجیب سی حالتو مے فر سے وو لوٹ یی تھی

Par sab kuch ek jali thi
Mohabbat bas ek gali thi
Tadap kar zinda laut aya us batil se
Kuch ajeeb si halato mei fir se vo laut ayi thi

Qayamat قیامت

دولت کی چکّر مے زندگی بھول دیا
ہر لمحے کی اہمیت کو چھینا بھول گیا
قیامت کی وقت آنے پر خدا نے کہا
کیسے نادان ہے تو جاہل
تو توہ جنّت مے جینا حیح بھول گیا

daulat ki chakkar mei zindagi bhul diya
har lamhe ki ahmiyat ko cheena bhul gaya
Qayamat ki waqt aane par khuda ne kaha
Kaisey nadaan hai tu jaahil
tu toh jannat mei jeena hi bhul gaya

Ye mohabbat یہ محبّت

جتنے بار بھی دور جاتی ہو تم
ہر لمحہ تنہری ہی کھال آتی ہے
اور یہ محبّت تمھاری وجود جیسے
وقت مے بہ کر چلی جاتی ہیں

Jitne baar bhi door jaati ho tum
Har lamha tumhari hi khial aati hai
Aur ye mohabbat tumhaari Wajood jaise
Waqt mei beh kar chali jaati hai